اعتراض:حضرت علی نے حضرت ابو بکر کو گالیاں دیں۔ (الحسن و الحسین)

شیعہ اعتراض حضرت علی نے حضرت ابو بکر کو گالیاں دیں۔ (الحسن و الحسین) الجواب: (١) مصر کا صحافی محمد رضاء نا کوئی متقی عالم و پرہیز گار بزرگ ہے اور نہ ہی معتبر دین دار شخص بلکہ یہ ایک صحافی ہے ان صحافیوں جیسا جو مذہب کو بلیک میل کرتے ہیں اور روپیہ پیسہ مزید پڑھیں

شیعہ اثناعشریہ کے خُرافات

شیعہ اثناعشریہ کے خُرافات  شیعہ اثنا عشریہ کہتے ہیں کہ:  فرشتوں کی ایک جماعت نے کسی چیز کے بارے میں آپس میں اختلاف کیا تو انہوں نے آدمیوں میں سے کسی کو حکم بننے کا سوال کیا تو اللہ نے ان کی طرف یہ وحی کی کہ تم لوگ خود انتخاب کرو تو انہوں نے مزید پڑھیں

شیعہ اثنا عشریہ کا اہل سنّت کےخلاف اس قدر حقد کرنا جو وصف سے باہر ہے

شیعہ اثنا عشریہ کا اہل سنّت کےخلاف اس قدر حقد کرنا جو وصف سے باہر ہے  شیعہ اثنا عشریہ کہتے ہیں کہ: بے شک ناصبی مسلم کا خون حلال ہے، لیکن میں تجھے تقیہ اختیار کرنے کو کہوں گا ،اگر تو اس ناصبی مسلم پر کسی دیوار کو گراسکے،یا اسےکسی پانی میں غرق کرسکے تاکہ مزید پڑھیں

شیعہ اثنا عشریہ کا مسلمانوں کی تکفیر کرنا اور ان سے حقد وحسد کرنا

شیعہ اثنا عشریہ کا مسلمانوں کی تکفیر کرنا اور ان سے حقد وحسد کرنا  شیعہ اثناعشریہ کہتے ہیں کہ: ائمہ اثنا عشریہ اور ان کے پیروکارشیعہ امامیہ کے علاوہ کوئی ملّت اسلام پر نہیں ہے۔ (دیکھیں: کتاب (أصول الکافي) للکلینی،۱؍۲۲۳،۲۲۴)۔  اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ: امام مہدی عنقریب واپس آئیں گے اور شیعوں کے دشمن مزید پڑھیں

تقیّہ (زبان سے کچھ کہنا اور دل میں کچھ رکھنا) اور جھوٹ شیعہ اثنا عشری مذہب کی اساس ہے

تقیّہ (زبان سے کچھ کہنا اور دل میں کچھ رکھنا) اور جھوٹ شیعہ اثنا عشری مذہب کی اساس ہے ٭شیعہ اثنا عشری تقیّہ کے قائل ہیں،اور ان کے نزدیک تقیّہ کہتے ہیں ایسی چیز کا اظہار کرنا جو باطن کے خلاف ہو، یا جیسا کہ ان کے علما میں سے کسی نے یوں تعریف کی ہے: تقیہ یہ مزید پڑھیں

شیعہ اثنا عشریہ کا مُتعہ پر ابھارنا اور بدکار عورتوں سے لطف اندوز ہونا

شیعہ اثنا عشریہ کا مُتعہ پر ابھارنا اور بدکار عورتوں سے لطف اندوز ہونا  شیعہ اثنا عشری کہتے ہیں کہ: آدمی بطور متعہ ہزار بار شادی کرسکتاہے، کیوں کہ متعہ والی عورت کو نہ طلاق دی جاتی ہے اور نہ وارث بنایا جاتا ہے،بلکہ یہ تو کرایہ پر لی ہوئی چیز ہوتی ہے۔ (دیکھیں: کتاب( مزید پڑھیں

شیعہ اثنا عشریہ کا رخسار پیٹنے اور کودنے واچھلنے کو عظیم ترین نیکی سمجھنا

شیعہ اثنا عشریہ کا رخسار پیٹنے اور کودنے واچھلنے کو عظیم ترین نیکی سمجھنا  شیعہ اثنا عشریہ کہتے ہیں کہ: عاشوراء کے موقع پر رخسار نوچنا، کودنا واچھلنا اور کالا لباس پہننا اور حسین رضی اللہ عنہ کا نوحہ وماتم کرنا عظیم ترین نیکیوں میں سے ہیں، بلکہ یہ افعال پسندیدہ اعمال میں سے ہیں۔(دیکھیں: مزید پڑھیں

شیعہ اثنا عشریہ کےاصحاب عمائم کا خُمس کھانا

شیعہ اثنا عشریہ کےاصحاب عمائم کا خُمس کھانا  شیعہ اثنا عشریہ کہتے ہیں کہ:  خُمس کا مال جو خاندان نبی ﷺ کے لئے مختص تھا اسے اصحاب عمائم اس حجّت کی بنا پر لیتے ہیں کہ وہ ان کے سرداب(غار) میں روپوش غائب امام کے قائم مقام ہیں۔ (دیکھیں: کتاب( وسائل الشیعۃ) للحر العاملی،۶؍۳۸۳)۔