میں تھی زیدی شیعہ (زینب)

میں تھی زیدی شیعہ

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    تحریر: زینب عرف زینی

جی ہاں میں ہوں زینب عرف زینی!

پرسوں سے فیس بک پر مولانا طارق جمیل کے عمران خان کی دعوت افطار پر اس کے گھر جانے پر جو میں دھما چوکڑی دیکھ رہی ہوں، قسم خدا کی دماغ کی دہی بن گئی ہے۔ اور جب میرا دماغ چکراتا ہےناں تو میں کافی خطرناک ہو جاتی ہوں۔۔۔۔ سو اسی جذباتی کیفیت میں آج میں ایک راز کھولنے جا رہی ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ بھی آپی فاطمہ سے مشورہ کیے بغیر۔

خوب غور سے پڑھنا…. جیسا کہ آپ کو میرے نام کے ساتھ زیدی کے لاحقے سے معلوم ہو گیا ہو گا کہ ہم زیدی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ زیدی شیعہ۔

تو یہ جو تم سب مولانا جمیل صاحب کو اچھل اچھل کر اسلام سکھا رہے ہو نا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ان پر شیعہ ہونے کی بات کر رہے ہو تو سن لو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ آج انہی کی وجہ سے ہم دونوں بہنیں سنی مسلک کے قریب ہوئی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میں گریجویشن کر رھی ہوں اور آپی پی ایچ ڈی کر رہی ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر اتنے مطالعے کے بعد بھی ہمیں کبھی اپنے فرقہ اور اس میں موجود کمزوریوں کا دھیان نہ ہو سکا۔۔۔۔۔۔۔ ہم بھی تمام لوگوں کی طرح اپنے آپ کو ہی درست سمجھتے تھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور وہ سب کام کرتے تھے جو اب مجھے معلوم ہے کہ بھت بڑا گناہ ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔آپ نے اگر زیدیوں کے بارے میں پڑھا ہو تو معلوم ہو گا کہ ہم امامیہ شیعہ کی طرح تو نہیں ہیں۔۔۔۔۔۔ مگر پھر بھی بڑے غلط عقائد ہیں ہمارے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سب سے بڑی بات یہ کہ ہم بھی برگزیدہ شخصیات کو کافر نہ سہی ظالم وغیرہ جیسے نامناسب الفاظ کہتے رہے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ تو ہوا یہ کہ کالج میں ایک سہیلی نور نے مجھے تمہارے ان مولانا طارق جمیل کے بیانات سنوائے۔۔۔۔۔۔۔ میں شروع ہی سے دینی کتابیں پڑھتی رہی ہوں۔۔۔۔۔۔۔ اس لیے دلچسپی سے ان کے کربلا والے بیانات سنے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور میں زندگی میں پہلی بار حیران رہ گئی کہ کیا ہم لوگوں سے بھی زیادہ سنی اہل بیت سے محبت کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مولانا جیسے بیان میں بے اختیار روئے۔۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ ہمارے ذاکروں سے بالکل برعکس تھا۔۔۔۔۔۔۔ ان کے بول بول میں محبت تھی، پیار تھا، عقیدت تھی۔۔۔۔۔۔۔ ہمیں تو ماں کی گود سے یہی بتایا گیا تھا کہ یہ سنی سارے اہل بیت کے دشمن ہیں۔۔۔۔ مگر پہلی بار ایک سنی عالم سے اہل بیت کے فضائل سنے تو میں سچ میں حیران رہ گئی۔

دل کے سنگھاسن میں سجا کفر کا بت کچھ ٹوٹا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ مگر آج آپ کو ایک عجیب بات اور بتاتی ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کم ازکم میرا تو یہی مشاہدہ ھے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ یہ کہ ہم لوگوں کو ماں کی گود میں ہی یہ لوری کے طور پر سنایا جاتا ہے کہ خلیفہ اول ظالم۔۔۔۔۔۔۔۔۔ خلیفہ دوم ظالم۔۔۔۔۔ یہ باتیں ہمارے دل میں کچھ ایسی اتر جاتی ہیں کہ تو بڑے ہو کر ہم کتنا بھی پڑھ لیں،،، سوچ لیں۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ بات دل سے نکلتی نہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جب تک اللہ کا خاص کرم کسی پر نہ ہو۔۔۔۔۔۔۔۔ اس لیے بے شمار بیانات اور مطالعے کے باوجود یہ بات دل میں نہیں اترتی تھی۔۔۔۔۔۔۔

مگر دوسری طرف ایسا ہوا کہ جمیل صاحب کے بیانات سن سن کر غیر محسوس طریقے سے میں ان تمام برگزیدہ شخصیات سے مانوس ہوتی چلی گئی جن کا نام بھی ہمارےہاں لینا جرم عظیم سمجھا جاتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اور ایک دن ایک بیان میں جمیل صاحب نے ایک ایسی کہی کہ میرا دل حق کے لیے کھل گیا۔۔۔۔۔۔ کہنے لگے کہ نبی کی قبر جنت کا باغ ہوتی ہے اور اسی جنت میں، اسی حجرے میں آپ کے دونوں پیارے ساتھی بھی، آپ کے ساتھ ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بس یہ بات میرے دل میں بس گئی۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہاں وہ اگر غلط ہوتے تو نبی مکرم کے ساتھ جنت میں بھلا کیسے ہوتے؟

اس کے بعد میں روز بروز اپنے ہاں کی رسوم سے بیزار آتی چلی گئی اور آپی بھی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یہ البتہ ہے کہ ابھی بھی ہم اپنے خاندان سے جڑے ہوئے ہیں لیکن ہم پر کوئی زبردستی نہیں کر سکتا کیوں کہ ہم خود مختار ہیں۔۔۔۔ اپنا کماتے ہیں، اپنا کھاتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔ اور اب میں پرسوں سے حیران ہوں کہ تم لوگ عجیب گھٹیا لوگ ہو، ایسی پیاری شخصیت سے نفرت کر رہے ھو۔۔۔۔۔۔۔۔ وہ شیعہ کو سنی کر رھے ہیں اور تم انہیں شیعہ کیے دے رھے ہو۔۔۔۔۔۔۔۔ سنو کیا تم جانتے ہو کہ پوری دنیامیں سب سے زیادہ متعصب شیعہ کہاں پائے جاتے ہیں؟

گلگت میں،،،

وہاں ایسے شیعہ ہیں کہ جس طرح تم دیوبندی بریلوی آپس میں ایک دوسرے کو مشرک اور کافر کہتے ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اسی طرح ہم زیدیوں کے نزدیک گلگت والے کافر ہیں۔۔۔۔۔۔۔

اسی گلگت میں تین سال پہلے چودہ خاندان شیعہ سے سنی ہوئے ہیں،،،

کیسے؟۔۔۔۔۔۔۔۔ مولانا کا قافلہ گیا تھا وہاں۔۔۔۔۔۔۔۔ ان کی محنت اور بیان سے۔۔۔۔۔۔۔۔ میں یقین سے لکھ رہی ہوں کہ یہ جو تم کافر کافر کے نعرے لگاتے ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ہو سکتا ہے کہ اپنی فقہ کے حساب سے درست ہو مگر یہ نوٹ کر لو کہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس سے شیعہ عوام کبھی قریب نہیں آئے گی تمہارے۔۔۔۔۔۔۔۔ کبھی سوچا کہ اس شیعہ لڑکے یا لڑکی کا کیا قصور ہے جو شیعہ گھرانے میں پیدا ہو گیا؟۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اس کو غلط چیز سے بچا کر حق بات پر کون لائے گا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور قریب لانے کے لیے اس کا دل لینا پڑے گا یا اسے کافر کہہ کر دور کیا جائے گا۔۔۔۔۔۔ میں ہمارےعالموں کی بات نہیں کر رہی ، عوام کی بات کر رہی ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔ یا پھر تم مجھے ثبوت دے دو کہ تم جو سنی ہو تو وہ اس لیے نہیں ہو کہ بتوفیق خدا سنی گھرانے میں پیدا ہو گئے ہو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بلکہ اس لیے ہو کہ تم نے پورے یقین کے ساتھ پوری جانبداری سے اپنے مطالعہ سے اس فقہ کو حق جانا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اور تم میں اتنی اہلیت ہے کہ اگر شیعہ گھرانے میں بھی پیدا ہوتے تو اپنے علم سے بچ جاتے؟؟؟

تو بتاؤ تم نے آج تک کافر کافر بول کر کتنے شیعہ کو سنی کیا ہے۔۔۔۔۔۔ اور مولانا نے کتنے شیعہ، قادیانی، عیسائی ، یہودی اور ملحدوں کو مسلمان بنایا ہے۔۔۔۔۔۔