مناظرہ: تحریف قرآن(علی معاویہ/عمار حیدر)

مناظرہ: تحریف قرآن

🌟شیعہ مناظر نے مناظرہ میں سنی مناظر کے سامنے ہتھیار ڈال دیے اور سنی مناظر نے شیعہ مناظر کو شکستِ فاش سے دو چار کردیا، آئیے میں اسکو ثابت کرتا ہوں….🌟

🔆ابتدائیہ🔆
مدعی: شیعہ مناظر عمار حیدر۔
مجیب: سنی مناظر مولانا علی معاویہ۔

شیعہ مناظر کا دعوٰی: اہلسنت کے بعض اکابرین قرآن میں قائل بالتحریف بلکہ فاعل بالتحریف تھے۔

سنی مناظر کا دعوٰی: اہلسنت اکابرین میں سے کوئی بھی قرآن میں تحریف کا قائل نہیں چہ جائیکہ فاعل بالتحریف بھی ہو۔
شیعہ مناظر کی دلیل: مسند احمد میں روایت ابن مسعودؓ کے حوالے سے کہ معوذتین (سورۃ الفلق سورۃ الناس) کو قرآن سے مٹاتے تھے اور فرماتے تھے کہ یہ قرآن میں سے نہیں ہے، اور اس کے علاوہ کچھ روایات۔
سنی مناظر کا جواب اور دلیل: مذکورہ روایت اور اس کے مماثل روایات میں سے کسی ایک سے بھی ابن مسعودؓ کا قائل بالتحریف ہونا ثابت نہیں ہوتا، آپ کے دعوے کا عدمِ اثبات اور دلائل کا نقض ہمارے دعوٰی کی دلیل ہے کیونکہ ہمارا دعوٰی بحثیتِ مجیب نفی میں ہے۔ اور نقض یوں ہے کہ ان تمام روایات میں احتمالِ نسخ باقی ہے اور ضابطہ یہ ہے کہ “أِذا جاؔء الاِحتمالُ بَطَلَ الاستدلالُ”۔

{تنقیح: سنی مناظر کے دلائل شیعہ مناظر کے دعوٰی تحریف کے نقض کیلئے ہیں احتمالِ نسخ کے اثبات کیساتھ، اس مناظرہ میں سنی مناظر پر اصولاً بحثیتِ منکر و مجیب دلائل کا نقض تو بالادلہ ضروری ہے جو احتمالِ نسخ کے اثبات سے کردیا مگر اصالۃً اہلسنت مؤقف پر دلیل اس مناظرہ کا لازمی جزو نہیں کیونکہ مؤقف کا دعوٰی نہیں اور جو دعوٰی قائم کیا گیا وہ نفی میں ہے۔ رہی بات کہ ابن مسعودؓ نسخ کے قائل تھے یا نہیں؟ اس کا جواب بھی بالادلہ دیا گیا کہ ذکر کردہ روایات شاذ ہیں جو ابن مسعودؓ ہی کی متواتر قراءت (جن میں معوذتین قرآن کا حصہ ہیں) کے مقابلہ میں ہیں لہٰذا ناقابلِ قبول ہے، اہلسنت کا نقطۂ نظر یہی ہے۔}

✍(تبصرے کے دو حصے ہیں

①جزوی تبصرہ

②مجموعی تبصرہ

~❶جزوی تبصرہ~

📚{سنی مناظر علی معاویہ صاحب نے شیعہ مناظر کے مندرجہ ذیل مطالبات پورے کرکے اور دلائل توڑ کر دعوٰی کو باطل کردیا}📚
👈۱: شیعہ مناظر نے جو روایات اثباتِ تحریف پر پیش کی تھیں اسمیں چار طرح کے الفاظ تھے ⑴لیستا من کتاب اللہ⑵لاتخلطوا ⑶لم تزیدون ⑷کان یحڪ ان چاروں الفاظ کا سنی مناظر علی معاویہ صاحب نے نسخ کی دلیل ہونا ثابت کردیا اور اس کے دعوٰی کو بلادلیل کی حیثیت دے کر چھوڑ دیا، چاروں کے مطالب یہ بیان فرمائے جو درج ذیل ہیں،،،،
؎ابن مسعودؓ اس لئے فرماتے تھے کہ منسوخ التلاوۃ کتاب اللہ میں مکتوب نہیں ہوتی،
؎منسوخ التلاوۃ ہونے کی وجہ سے خلط ملط کرنے سے روکتے تھے،
؎کتاب اللہ میں نہ ہونے (یعنی منسوخ التلاوۃ ہونے) کی وجہ سے زیادتی کرنے سے روکتے تھے،
؎منسوخ التلاوۃ ہونے کی وجہ سے مٹاتے تھے۔
👈۲: پھر شیعہ مناظر نے مطالبہ کیا کہ پہلے قرآن ہونا ثابت کرو نسخ پھر بعد میں ہی ثابت ہوسکتا ہے کیونکہ نسخ کیلئے ضروری ہے کہ پہلے قرآن ہونا ثابت ہو، تو سنی مناظر علی معاویہ صاحب نے اسی کی پیش کردہ روایت کو دلیل بنا کر پیش فرما دیا کہ مٹایا تبھی جاتا ہے جب پہلے ثابت اور مکتوب ہو لہٰذا نسخ و احتمالِ نسخ ثابت ہو گیا۔
👈۳: پھر شیعہ مناظر نے دجل سے کام لیتے ہوئے انما انما کی تاکید کے ذکر کے بعد یہ کہا کہ معوذتین تعویز کے لئے مستعمل ہونا ثابت ہے لہٰذا یہ غیر قرآن ہے، تو سنی مناظر علی معاویہ صاحب نے گرفت کی کہ تعویز کے لئے ثابت کرنا نسخ التلاوۃ کے منافی کیسے؟؟؟ فبہت الذی کفر۔
👈۴: شیعہ مناظر نے اعتراض کیا کہ سنی مناظر نے مانا ہے کہ ابن مسعودؓ کی روایت خبر واحد ہے تو یہ متواتر کے مخالف ٹھہرے ان پر اجماع کے منکر والا حکم لگنا چاہئے(معاذﷲ)، تو سنی مناظر علی معاویہ صاحب نے اولا ان کی فہم و فراست اور قوتِ سمع و بصر پر تعجب کیا اور پھر سمجھایا کہ ابن مسعودؓ کی خبر واحد کے مقابلے میں متواتر قرأت نہیں جو ان پر حکم لگایا جائے بلکہ ابن مسعودؓ کی ہی قرأت متواتر ہے جس سے معوذتین کا قرآن ہونا ثابت ہے اور نسخ التلاوۃ والی اخبار جو ابن مسعودؓ کی طرف منسوب ہیں وہ شاذ ہیں جن کی متواتر کے مقابلے میں حیثیت نہیں، فبہت الذی کفر۔
👈۵: پھر شیعہ مناظر نے کہا کہ اگر معوذتین منسوخ ہیں تو ناسخ کیا ہے؟ تو علی معاویہ صاحب نے دفاعی اور الزامی دونوں نوعیت کے جواب دیے کہ جب تلاوۃ منسوخ اور حکم باقی ہو جوکہ نسخ کی تیسری قسم ہے اس میں ناسخ نہیں ہوتا، اگر ناسخ ضرور ہوتا ہے تو بتاؤ آیت رجم کا ناسخ کیا ہے؟ فبہت الذی کفر۔
👈۶: پھر شیعہ مناظر کہہ بیٹھا کہ “میں اس نسخ کو نسخ نہیں مانتا جس پر دلیل نہ ہو” تو سنی مناظر نے فورا گرفت کی اور حوالہ دیا مجمع البیان ص۲۴۸ کا کہ جس میں نسخ کی تمام اقسام پائی جارہی ہیں مگر دلیل کسی ایک پر بھی نہیں، اگر یہ کہہ دیا جائے کہ یہ تقیۃً قائل تھے تو پھر اس حیران کن بات پر بطورِ سوال نکیر یوں کہ قائل امام ہوتا ہے اور تقیہ پر حمل بعد کے شیعہ کرتے ہیں. فیا للعجب۔
📖اھلسنت مؤقف کی تائیدات📖
✔کسی صحابی نے بھی ابنِ مسعودؓ کا رد نہیں کیا، اور نہ ہی اس پر شیعہ مناظر ضعیف روایت ہی سہی مگر وہ بھی پیش نہ کرسکا۔ یہ اس بات کی واضح دلیل ہے کہ یہ روایات تحریف پر محمول نہیں اگر تحریف مراد ہوتی تو صحابہؓ ضرور رد کرتے جیسا کہ عباسؓ سے متعہ کے مسئلہ میں علیؓ نے اختلاف اور رد کیا تھا۔
✔کسی اھلسنت عالم نے بھی اس روایت سے تحریف مراد نہیں لی ہے، اگر مراد ہوتی تو تاریخ میں اقوال موجود ہوتے جبکہ کوئی قول بھی موجود نہیں۔
——–اس بحث میں شیعہ مناظر کے تمام جزئی اعتراضات کے سنی مناظر علی معاویہ صاحب دندان شکن اور شافی دیکر اہلسنت کی سرخروئی اور روافض کی بےتابی کا سبب بنے۔
آئیے آگے بھی کچھ ثابت کرنے جارہا ہوں۔

~❷مجموعی تبصرہ~
📚{سنی مناظر مولانا علی معاویہ اپنے دعوے کو بالادلہ ثابت کرکے فتح یاب}📚
سنی مناظر مولانا علی معاویہ نے شیعہ مناظر کے علی المصر مطالبے پر کہ “ابن مسعودؓ کا معوذتین کو قرآن ماننا ثابت کردیں تو نسخ التلاوۃ تسلیم کرلیا جائے گا” عدمِ التزام کے باوجود اس پر دو روایتیں پیش کردیں ①الدر المنثورص۷۸۶ کی روایت جو الطبرانی سے ماخوذ تھی ②کنزالعمال ص۶۰۱ کی روایت جو فردوس الاخبار سے ماخوذ تھی۔
اس پر شیعہ مناظر نے رواۃ پر جرح کی جس کے جواب میں سنی مناظر نے بالادلہ رواۃ کا ثقہ ہونا ثابت کردیا وہ اسطرح کہ:
ابن عائشہ ثقہ ہے کہ سیوطی حسن کہہ چکے ہیں۔
مجمع الزوائد میں علامہ ھیثم ثقہ کہہ چکے ہیں۔
ابن حجر جیسے ناقدُ الرجال نے بھی کوئی جرح نہیں کی، ان کا جرح نہ کرنا بھی مستقل صحیح ہونے کی دلیل ہے۔
پھر تاریخ بغداد میں جس کو صدوق فی الحدیث کہا گیا پھر ایک شیعہ مناظر کی کیا حیثیت کہ وہ جرح کرے؟
یوں ابن مسعودؓ کا معوذتین کو قرآن ماننا ثابت کرکے شیعہ مناظر کو شکستِ فاش دے دی اور تسلیم کرنے پر مجبور کردیا۔

📚{سنی مناظر مولانا علی معاویہ کو فتح مبارڪ}📚
👈۱: شیعہ مناظر اثباتِ تحریف بدونِ احتمال النسخ ہرگز ہرگز ثابت نہ کرسکا۔
👈۲: شیعہ مناظر پر اولا اپنے دعوٰی تحریف پر دلیل دینا لازم تھا اگر مع الدلیل ثابت کردیتا تو پھر مولانا علی معاویہ پر بطورِ دعوٰی احتمال نسخ پر دلیل دینا ضروری ہوتا لیکن شیعہ مناظر اپنے دعوٰی پر دلیل دینے سے عاجز رہا اور سنی مناظر نے باوجودیکہ ان پر احتمال نسخ پر دلیل دینا لازم نہیں تھا پھر بھی دلیل دے کر احتمال نسخ ثابت کردیا (جیسا کہ جزوی حصہ کی شق ۱ اور ۲ میں ذکر کردیا گیا) اور دعوٰی تحریف کو سرے سے ہی باطل ثابت کردیا۔
👈۳: شیعہ مناظر نے دورانِ مناظرہ مجادلۃ کے نام پر واضح طور پر تسلیم کرلیا کہ یہ منسوخ التلاوۃ ہے، اور ساتھ ہی یہ کہہ دیا کہ منسوخ ہونے پر کوئی حدیث نہیں ہے۔ یہ رویہ واضح شکست کے بعد دلیل کا ڈھونگ رچانا ہے کیونکہ یہ تو الگ موضوع ہے کہ منسوخ ماننا درست تھا یا نہیں۔ مگر بہر صورت نسخ ثابت ہوا شیعہ مناظر شکست خوردہ۔
👈۴: جب شیعہ مناظر کا کوئی بس ناں چلا تو کہا کہ ابن مسعودؓ اور امام رضا کو اجتہادًا قائل بالتحریف قرار دے دیا جائے اور اجتہادا قائل بالتحریف پر حکم نہیں ہوتا لہٰذا امام رضا اور ان کے معتقدین بچ جائیں گے، اس پر اھلسنت مناظر نے اسکی یہ چال بھی نہ چلنے دی اور کہا کہ اھلسنت والجماعت کے نزدیک ایمانیات میں اجتہاد کی کوئی گنجائش نہیں۔ رہی بات ابن مسعودؓ کی روایات کی ان کا جواب دے دیا جبکہ تم شیعوں پر امام رضا کی عبارات کا جواب باقی ہے۔

❌{شیعہ مناظر پر باقی ماندہ اعتراضات}❌

👈۱: شیعہ مناظر نے کہا تھا کہ قرآن، حدیث قدسی اور حدیثِ نبوی کے علاوہ اور کچھ بھی نہیں ہوتا، جبکہ شیعہ مناظر سنی مناظر کے سامنے اثباتِ وجودِ نسخ کا اقرار کرچکا ہے۔
👈۲: شیعہ مناظر نے اقرار کیا کہ یحڪ کے دو معنٰی ہیں ⑴مٹا دینا ⑵سرے سے داخل ہی نہ کرنا۔ ریکارڈ میں اقرار موجود ہے کہ تسلیم کرلیا دوسرا معنٰی مجازی ہے، پھر دوسرے معنٰی کو بلا کسی مرجح دلیل کے مراد لے لیا جو اہلِ اصول کے ہاں ناجائز ہے۔
👈۳: شیعہ مناظر نے ابن عائشہ کی روایت پر یہ کہا کہ راوی پر جرح نہیں مگر بخاری و مسلم کا راوی نہ ہونے کی وجہ سے ناقابلِ قبول ہے مطلب کہ روایت کے ضعف کی وجہ صرف بخاری و مسلم کا راوی نہ ہونا ہے، یہ شرائطِ مناظرہ کی واضح خلاف ورزی ہے۔
👈۴: شیعہ مناظر کہہ بیٹھا کہ کنزالعمال والی روایت الدیلمی سے نہیں بلکہ عقبہ بن عامر سے ہے، اگر شیعہ مناظر غور سے دیکھتے تو نظر آجاتا کہ عقبہ بن عامر والی روایت نمبر۲۷۴۲ اور الدیلمی والی روایت نمبر۲۷۴۳ ہے۔
👈۵: اگر ابن مسعودؓ کے حوالے سے مذکورہ روایات کا تحریف پر ہی حمل کرنا ہے تو آٹھویں امام رضا رح اور ان کے عقیدت مند شیعوں کا کیا حکم ہوگا کہ امام رضا الفقہ ص۱۱۳ میں واضح الفاظ میں کہتے ہیں “لیستا من القرآن دخلوھا فی القرآن” جبکہ یہ الفاظ تحریف پر صراحتا دلالت کرتے ہیں۔
۔
💐🌹ہم سنی مناظر مولانا علی معاویہ صاحب کو شیعہ مناظر کے مقابلے فتح یاب ہونے پر مبارک باد پیش کرتے ہیں🌹💐