شیعہ اثنا عشریہ کے من گھڑت (جھوٹے وخود ساختہ)مہدی اور قولِ رجعت

شیعہ اثنا عشریہ کے من گھڑت (جھوٹے وخود ساختہ)مہدی اور قولِ رجعت

  شیعہ اثنا عشریہ اس بات کے قائل ہیں کہ:

جبرئیل ،میکائیل، کرسی، لوح محفوظ اور قلم سب ان کے مہدی کے تابع ومطیع ہیں، یہ اس لئے کہ ان کے مہدی سفّاح (خون ریز) ہیں۔

(دیکھیں : کتاب( عقائدالإمامیۃ) لمحمد رضا مظفر ،ص۱۰۲)۔

 اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ :

شیعہ کے نام نہادمہدی کا جسم اسرائیلی جسم ہے۔

(دیکھیں: کتاب( الإمام المھدي من الولادۃ إلی الظھور) لمحمد قزوینی ،ص۵۳)۔

 اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ:

شیعہ کے مہدی نیا حکم ،نیا کتاب، نیا فیصلہ لے کر آئیں گے اور وہ عرب پر شدید ہوں گے،ان کا معاملہ صرف تلوار کاہوگا، نہ وہ کسی کا توبہ قبول کریں گے اور نہ ہی اللہ کی راہ میں کسی ملامت گر کی ملامت کو خاطر میں لائیں گے۔(دیکھیں: کتاب( الغیبۃ) لمحمد نعمان ،ص۱۵۴)۔

 اسی طر ح وہ کہتے ہیں کہ:

 جب مہدی خروج کریں گے تو ان کے اور عرب وقریش کے درمیان معاملہ صرف تلوار کا ہوگا۔

 (دیکھیں: کتاب( الغیبۃ) لمحمد نعمان ،ص۱۵۴)۔

  اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ:

ہمارےاور عربوں کے درمیان صرف ذبح کا معاملہ باقی رہ گیا ہے، اور پھرہاتھ سے اپنے حلق کی طرف اشارہ کیا۔

( دیکھیں: کتاب( الغیبۃ) لمحمد نعمانی ،ص۱۵۵)۔

 اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ:

 ان کے مہدی مسجد حرام اور مسجد نبوی کو مسمار کریں گے، اور آل داؤد کے حکم کے مطابق فیصلہ کریں گے، اور اللہ سے اپنے عبرانی نام سے کلام کریں گے، بلکہ دوتہائی زمین کے لوگوں کو قتل کریں گے۔

(دیکھیں: کتاب (بحار الأنوار) للمجلسی،۵۲؍۳۳۸، وکتاب(أصول الکافي) ،۱؍۳۹۷، وکتاب(الغیبۃ) للنعمانی،ص۳۲۶،وکتاب (الّرجعۃ) لاحمد احسائی ،ص۵۱)۔

٭اسی طرح وہ کہتے ہیں کہ:

جہاد اس وقت تک جائز نہیں جب تک ان کے نام نہادمہدی اپنے سرداب(غار) سےباہر نہ آجائیں۔

(دیکھیں: کتاب (وسائل الشیعۃ) للحر العاملی،۱۱؍۳۷)۔