جنازہ نبی کریم:شیعہ کتاب احتجاج طبرسی سے ثبوت

شیعہ کتاب احتجاج طبرسی میں آں حضرت صلی اللہ علیہ وسلم کے جنازے میں انصار و مہاجرین کی شرکت کے متعلق مرقوم ہے:

[ثم ادخل عشرۃ من المہاجرین و عشرۃ من الانصار فیصلون و یخرجون حتیٰ لم یبق من المہاجرین والنصار الا صلی علیہ]

ترجمہ: پھر حضرت علیؓ دس دس مہاجرین اور انصار کو حجرۂ مبارکہ میں جنازہ کے لیے داخل کرتے رہے پس وہ لوگ نماز جنازہ پڑھتے اور نکلتے رہے۔ یہاں تک کہ مہاجرین و انصار میں سے کوئی ایسا نہ رہا جس نے آں حضرت صلی اللہ علیہ وسلم کا جنازہ نہ پڑھا ہو۔۔۔۔۔

اس کا واضح مطلب یہ ہے  کہ کوئی ایک صحابی بھی ایسا نہ رہا جس نے حضور ﷺ کا جنازہ نہ پڑھا ہو۔
👇👇👇